مسئول جدیدخانه فرهنگ|درباره ما‎|صفحه اصلی|ايران|اسلام|زبان و ادبيات فارسی|تماس با ما|پيوندها|نقشه سايت
اخبار > ایران میں برف سے جمے ہوئے غار «چما»، مشرق وسطی کی سب سے ٹھنڈی جگہ


  چاپ        ارسال به دوست

اخبار

ایران میں برف سے جمے ہوئے غار «چما»، مشرق وسطی کی سب سے ٹھنڈی جگہ

تہران، ارنا – ایران کے مغربی صوبے «چہارمحال و بختیاری» میں دنیا کا ایک حیرت انگیز غار جس کا نام «چما» ہے، واقع ہے جو برفوں سے جما ہوا ہے اور اسے مشرق وسطی خطے کی سب سے ٹھنڈی جگہ مانا جاتا ہے.

مشرق وسطی کا سردترین مقام ایرانی مغربی صوبے چہارمحال بختیاری میں واقع ہے۔ "چما" نامی برفانی غار اپنی مثالی اور منفرد خصوصیات کے ساتھ ایران کے حیرت انگیز غاروں میں سے ایک ہے جو بہت سے سیاحون کو اپنی طرف راغب کر رہا ہے.

چما یا چی ما لفظ اس علاقے کے خانہ بدوش افراد کی بختیاری بولی سے پایا جاتا ہے.
چما یا «چی ما» ایران کے بختیار قبیلے کی زبان میں مرغزار یا پانی کے کنارے میں موجود مرغے کو کہتے ہیں.
آئس غار شیخ علیخان گاؤں کے قریب اور 25 کلومیٹر چلگرد سے فاصلے پر واقع ہے جو ایک بہت بڑی گھاٹی اور برفانی گودام کی طرح ہے.
چما آئس غار کے برفوں کی اونچائی 50 میٹر تک پہنچ جائے گی۔ اس غار میں برف کی تہہ گرم موسم اور بارش کی کمی کے ساتھ ان کی موٹائی بہت پتلا اور ڈھیلا ہوجاتی ہے لہذا موسم گرم میں اس غار سے گزرنے سے دوری کرنا چاہئیے.
موسم گرما میں پتھریلی گھاٹی پر ﺑﺮﻑ ﮐﯽ ﺳﻞ ﺑﮭﯽ ﺗﻮ ﺣﺪﺕ ﺳﮯ ﭘﮕﮭﻞ ﺟﺎﺗﯽ ﮨﮯ جس کے نتیجے میں ایک آئس غار کی تشکیل کا باعث بن رہی ہے.
یہ برفانی غار چما علاقے کے نوجوان اور جوان خانہ بدوشوں کے لئے ایک تفریحی اور سیاحتی جگہ ہے جس میں حالیہ سالوں کے دوران موسم گرما کے ملکی اسکیئنگ ٹورنامنٹ کا انعقاد کیا جاتا ہے.
یہ بات قابل ذکر ہے کہ یہ برفانی غار ایران کے میٹھا پانی کے سب سے بڑے وسیلہ میں شمار کیا جاتا ہے.
اس غار کی برف کے نیچے سے ایک ٹھنڈا پانی چشمہ بہہ رہا ہے جو کوہرنگ ڈیم پر بہایا جاتا ہے.


١٣:٠٦ - 1398/05/22    /    شماره : ٧٣٤٢٩٨    /    تعداد نمایش : ٣٦



خروج




منو اصلی
آمار بازدید
 بازدید این صفحه : 11317 | بازدید امروز : 62 | کل بازدید : 560172 | بازدیدکنندگان آنلاين : 2 | زمان بازدید : 4.6719