مسئول جدیدخانه فرهنگ|درباره ما‎|صفحه اصلی|ايران|اسلام|زبان و ادبيات فارسی|تماس با ما|پيوندها|نقشه سايت
اخبار > توہین اور ڈالروں کے بغیر سعودی قوم کے مفادات کا دفاع کرنے کیلئے تیار ہیں: ایرانی صدر


  چاپ        ارسال به دوست

اخبار

توہین اور ڈالروں کے بغیر سعودی قوم کے مفادات کا دفاع کرنے کیلئے تیار ہیں: ایرانی صدر

ان خیالات کا اظہار ڈاکٹر ""حسن روحانی"" نے ہفتہ کے روز ایرانی دارالحکومت تہران میں 32ویں عالمی اتحاد امت کانفرنس کی افتتاحی نشست سے خطاب کرتے ہوئے کیا.
اس موقع پر انہوں نے نبی پاک حضرت محمد مصطفی (ص) کے میلاد پر تمام عالم اسلام کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ آج خطے کی صورتحال گھمیبر اور تشویشناک ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ ہم نے جس طرح عراق، شام، افغانستان اور یمنی عوام کا سامراجی قوتوں اور دہشتگردوں کے خلاف دفاع کیا ویسے ہی سعودی عرب کے عوام کے مفادات کا بھی دفاع کرنے پر تیار ہیں.
انہوں نے کہا کہ ایران، دہشتگردی، دشمنوں بالخصوص طاغوتی قوتوں کے سامنے سعودی قوم کے مفادات کا بھرپور طاقت سے دفاع کرنے پر تیار ہیں.
ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ ایران جس طرح عراق، شام، یمن اور افغان قوموں کی مدد کے لئے میدان میں نکلا ویسا ہی سعودی عوام کے دفاع کے لئے میدان میں حاضر رہے گا.
انہوں نے مزید کہا کہ فلسطین کی موجودہ صورتحال، لیبیا، شام، یمن حتی کہ افغانستان، پاکستان اور عراق میں جو حالات ہیں وہ ایسے نہیں جو ایک اسلامی معاشرے میں ہونے چاہئیں.
ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ امریکہ دوسروں ملکوں سے اربوں ڈالر بٹور کے ان کی حمایت کے ساتھ ساتھ ان کے خلاف توہین آمیز رویہ اپناتا ہے. 
انہوں نے سعودی عوام سے استفسار کیا کہ خطے میں آپ کا دشمن کون ہے؟ آپ ہمارے بھائی ہیں اور ہم تمام علاقائی قوموں کو اپنا بھائی سمجھتے ہیں.
ایرانی صدر مملکت نے مزید کہا کہ ہم کسی سے 450 ارب ڈالر لئے بغیر سعودی عوام کے مفادات کا بھرپور طاقت سے دفاع کرنے کے لئے تیار ہیں.
انہوں نے کہا کہ مکہ مکرمہ اور مدینہ منورہ کے عوام ہمارے بھائی ہیں. آپ بیہودہ باتیں اور من گھڑت کہانیوں سے خوفزدہ نہ ہوں، ایران سے آپ کو کوئی خوف نہیں ہونا چاہئے بلکہ آپ کو طاغوتی قوتوں اور غداروں سے ڈرنا چاہئے جبکہ ہم آپ کے بھائی ہیں.
ڈاکٹر روحانی نے مزید کہا کہ ہم آپ کے ساتھ کھڑے ہیں. ہم رنج و دکھ میں مبتلا ہیں جب دیکھتے ہیں کہ کچھ عناصر اسلام اور مسلمانوں کے نام پر غریب مسلمانوں پر مظالم ڈھاتے ہیں اور یہ وہی عناصر ہیں جن کے پیچھے دین کے نام نہاد علمبردار حکمران ہیں.
صدر اسلامی جمہوریہ ایران نے کہا ہے کہ عالم اسلام اور امریکہ کے درمیان اختلاف آزادی اور غلامی پر ہے کیونکہ امریکہ خطی ممالک کو اپنا غلام بنانا چاہتا ہے.
انہوں نے مزید کہا کہ آج عالم اسلام اور مغربی دنیا بالخصوص امریکہ کے ساتھ اختلاف اور جنگ صرف دو جملوں تک محدود ہیں، آزادی اور غلامی. 
صدر مملکت نے یہ استفسار کیا ہے کہ کیا آزادی صرف مغرب کے لئے ہے اور غلامی دوسروں کے لئے ؟ یا آزادی سب کے لئے ہے؟ 
انہوں نے مزید کہا کہ نبی کریم (ص) کی منطق اسلام، انسانوں کی خودمختاری اور اسلامی امت کی آزادی ہے جبکہ امریکہ خطے اور دنیا کو اپنا غلام بنانا چاہتا ہے.
ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ہمارے اور ان کے ساتھ اختلافات خودمختاری اور غلامی پر ہیں، وہ کہتے ہیں کہ سب کو امریکہ کی طرح سوچنا ہوگا اور امریکی اقدار کا احترام کرنا چاہئے، مگر ہم کہتے ہیں کہ تمام انسان خودمختار ہیں کیونکہ وہ سوچ سکتے ہیں اور اپنے مستقبل پر اچھی طرح فیصلہ کرسکتے ہیں، اور وہ ان اقدار اور تعلیمات کا احترام کرتے ہیں جس کے ذریعے سے انسان کو اچھی منزل کی طرف ہدایت ملتی ہے.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ یہ ایک طویل المدت اختلاف ہے جو صدیوں سے چلا آرہا ہے، پہلی اور دوسری عالمی جنگوں کے بعد یہ اختلافات مزید منظر عام پر آگئے.
ڈاکٹر روحانی نے کہا کہ ان لوگوں کا کہنا ہے کہ جن کے پاس اعلی عسکری طاقت ہو اور اقوام متحدہ میں ویٹو کا حق ہو تو دنیا میں وہ مستقل طاقت اور حتمی فیصلہ کرسکتا ہے.
انہوں نے یہ سوال اٹھایا کہ کس طرح خطے میں اسرائیل کے نام سے ایک جعلی اور ناجائز ریاست معرض وجود میں آئی اور کس طرح فلسطینی قوم اور ان کی تاریخ کو تباہ کردیا گیا.
صدر مملکت نے مزید کہا کہ فلسطنی عوام کو کئی دہائیوں سے صہیونیوں کی جانب سے قتل و غارت، جارحیت، بربریت اور مظالم کا سامنا ہے، مگر مسئلہ کیا ہے؟ 
انہوں نے امریکی حکمرانوں کو مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ علاقائی ممالک سے سچ بول رہے ہیں اور ان پر بھروسہ کرتے ہیں تو یہ بتائیں کہ کیوں امریکہ، اسرائیل کو بچانے کے لئے ایک مخصوص ملک میں جابر نظام کو برقرار رکھنے پر مُصر ہے.
ایرانی صدر نے مزید کہا کہ آج خطے میں ساری باتیں صرف ایک جگہ پر گھوم رہی ہیں کہ ناجائز صہیونی ریاست اور اس کے جابر اور ظالمانہ طاقت کو بچانا ہے.


١٠:٠٦ - يکشنبه ٤ آذر ١٣٩٧    /    شماره : ٧١٨٤١٨    /    تعداد نمایش : ١٥



خروج




منو اصلی
آمار بازدید
 بازدید این صفحه : 7262 | بازدید امروز : 758 | کل بازدید : 528422 | بازدیدکنندگان آنلاين : 1 | زمان بازدید : 4.4219