مسئول جدیدخانه فرهنگ|درباره ما‎|صفحه اصلی|ايران|اسلام|زبان و ادبيات فارسی|تماس با ما|پيوندها|نقشه سايت
اخبار > ایران میں قلعہ رودخان نامی دلکش مقام پر ایک جھلک


  چاپ        ارسال به دوست

اخبار

ایران میں قلعہ رودخان نامی دلکش مقام پر ایک جھلک

رودخان قلعہ ایرانی شمالی شہر کے قریب اور شہر فومن سے 30 کلومیٹر کے فاصلے پر ہے.
یہ قلعہ، گاوں"رودخان" میں سمندر سے 665 سے لے کر715 تک میٹر کی بلندی پر واقع ہے .اس کا کل رقبہ 2.6 ایکڑ ہے، اس کی 1500 میٹر دیوار پتھر اور اینٹوں سے بنائی گئی ہے اور اس کے تقریبا 65 برج ہیں.
بعض ماہرین کا خیال ہے کہ اس قلعہ کا تعلق ساسانی دور حکومت سے ہے اور روایات کے مطابق یہ قلعہ اسلام کی آمد سے پہلے تعمیر کیا گیا ہے.
کچھ تاریخی دستاویزات کے مطابق یہ قلعہ دسویں ھجری قمری میں گیلان کے حاکم مظفرالسلطان کی حکومت کے فوجی مقاصد کے لئے بنایا گیاہے.
ہم کو اس قلعہ پہنچنے کے لیے ایک ہزار سیڑھیوں سے چڑھنا چاہیے. 
یہ قلعہ دوسرے پہاڑے قلعوں کی طرح پہاڑ کا بلندترین نقطہ پر واقع ہے، ایران کے دوسرے علاقوں میں ان قلعوں کی طرح بہت موجود ہیں جن میں سے ہم ایران کے صوبے آذربائیجان شرقی میں "بابک قلعہ "، صوبے قزوین میں قلعہ الموت" اور صوبے کرمانشاہ میں قلعہ یزدگرد اور غیرہ کی طرف اشارہ کر سکتے ہیں قابل ذکر ہے کہ ان قلعوں کے دو بڑے برج اور بہت سی چھوٹے برج ہیں. 
قلعے پر دشمن کے حملوں کو روکنے کے لیے پہاڑی قلعوں کے دیواروں کے ارد گرد ایک خطرناک اترائی موجود ہے.
بہت سے پہاڑے قلعے قدرتی عوامل اور مختلف لوگوں کی جانب سے قبضہ کرنے کی وجہ سے جزوی طور پر تباہ ہوگئے ہیں لیکن قلعہ رودخان ان قلعوں میں صحت مندتریں میں سے ایک ہے جنہوں نے ابھی بھی اپنی خوبصورتی کی حفاظت کی ہے.
اس قلعہ کے شمال مغربی حصے سے نہر بہتا ہے اور زبردست آبشار بھی ہے جس قلعہ قابل دید اور دلکش مناظر کی کثرت کی وجہ سے ملکی اور غیر ملکی سیاحوں کیلئے دلچسپی کا باعث بنا ہوا ہے.


١٠:١٤ - چهارشنبه ٧ شهريور ١٣٩٧    /    شماره : ٧١٢٥٨٧    /    تعداد نمایش : ٣٦



خروج




منو اصلی
آمار بازدید
 بازدید این صفحه : 7211 | بازدید امروز : 111 | کل بازدید : 527285 | بازدیدکنندگان آنلاين : 3 | زمان بازدید : 4.0000